Sun, Feb 28, 2021
جمعیتہ علماء تلنگانہ وآندھر پردیش کے جانب سے تقریبا70 لاکھ کی امداد
غذائی اجناس اور چاول کے کٹس، کھانے کے پاکٹس،  رقمی امداد اور متاثرین کو سہولیات کی فراہمی شامل۔
حیدرآباد: 18 اپریل(راہِ اسلام) مفتی محمد زبیرقاسمی جنرل سکریٹری جمعیتی علماء تلنگانہ وآندھراپردیش کی اطلاع کے مطابق جمعیتہ علماء ہند کے صدرمحترم حضرت مولانا سید ارشد مدنی صاحب دامت برکاتہم کی ہدایت پر جمعیتہ علماء تلنگانہ وآندھراپردیش لاک ڈاؤن کے پہلے ہی دن سے مسلم وغیرمسلم متاثرین بالخصوص غریب طبقہ کی امداد و راحت رسانی کے لئے کوشاں اور فکر مند ہے، متاثرہ افراد کی قانونی امداد مختلف علاقوں میں پھنسے ہوئے لوگوں کو ان کی منزلوں تک پہونچنے میں مدد، کورنٹائین اورآیسولیشین میں پہونچے ہوئے افراد کے لئے سہولیات کی فراہمی اور اس خصوص میں حکومت کے ذمہ داروں کے ساتھ رابطے کا کام جمعیتہ علماء مستقل کررہی ہے، اس خصوص میں ریاستی صدر حضرت مولانامفتی غیاث الدین رحمانی قاسمی نے تمام اضلاع کو متوجہ کیا اور ہر ضلع بشمول حیدرآباد، نظام آباد، کریم نگر، منچیریال،ظہیرآباد، مکتھل،کاماریڈی،کھمم ، پامور،پرکاشم،راجمنڈری، تنالی،کرنول،کدری،اونگول،عادل آباد،نرمل،رنگاریڈی وغیرہ تمام اضلاع میں جمعیتہ علماء کی طرف سے چھ ہزار دو سو پینتیس(6235) غذائی اجناس اور چاول کے کٹس اور پکے ہوئے کھانے کے سات ہزار سات سو اسی (7780) پاکٹس اور نقد رقم کی شکل میں تقریبا تین لاکھ کی امداد کی گئی، اس امدادی کام کی مجموئی رقم تقریبا ونتھر لاکھ (6924000)
ہے،جمعیتہ علماء نے اس خصوص میں اپنے تمام ضلع کے اور شہر حیدرآباد کے ذمہ داروں سے موقع بموقع اس بات کی بھی خواہش کی ہے کہ وہ تمام حفاظتی تدابیر کے ساتھ رفاہی خدمات انجام دیں، اس خصوص میں محکمہ پولیس اور محکمہ ریونیو کی طرف سے جمعیتہ علماء کو تعاون حاصل رہا اس کے لئے جمعیتہ علماء حکومت کی بھی شکر گذار ہے، دعا گو ہے کہ اللہ رب العزت کارکنان جمعیتہ اور اس کے مختلف اضلاع کے ذمہ داروں کی ان کاوشوں کو شرف قبولیت سے نوازے اور اس وباء سے جلد سے جلد انسانیت کو راحت نصیب فرمائے۔