Sun, Feb 28, 2021

واٹس ایپ گروپ احکام و مسائل کی خدمات اب فیس بک پر

پیج کو لائک اور شیئر کرنے فیس بک صارفین سے مفتی محمد اظہر الدین حسامی کی اپیل

بلاشبہ دور حاضرمیں سوشل میڈیا بہت ہی مضبوط شکل اختیار کر چکا ہے۔ اِس کا اندازہ ایک انٹرنیشنل سروے کی اِس رپورٹ سے لگا سکتے ہیں کہ “عام آدمی کے سوشل میڈیا کی طرف رجحان کی وجہ سے عالمی الیکٹرنکس مارکیٹ کی شرح میں 35 سے 40 فیصد کمی واقع ہوئی ہے۔۔۔!”
یکم جنوری 1983کو انٹرنیٹ کی ایجاد کے بعد دنیا میں ایک انقلاب برپا ہو گیا، انٹرنیٹ کے ذریعے سوشل میڈیا نے جدیددنیا میں روابط کو ایک نئی شکل دی،اِسکی وجہ صرف یہ ہے کہ آج آپ کو سوشل میڈیا پر ہر وہ چیز باآسانی میسر آ سکتی ہے جو آپ ٹی۔وی پر دیکھنا چاہتے ہیں۔
اور اب سوشل میڈیا نوجوانوں کی بڑی تعداد کی دلچسپی کا محور و مرکز بن چکا ہے۔ آج ذرائع ابلاغ میں سوشل میڈیا کا استعمال سب سے زیادہ ہے۔
جس طرح ہر چیزکے مثبت و منفی اثرات ہوتے ہیں، جو اس کو استعمال کرنے والوں پر منحصر ہوتے ہیں، اسی طرح سوشل میڈیا کے بھی دونوں قسم کے اثرات ہیں، لیکن لوگوں نے اسکے مقاصد کو نظر اندازکرنا شروع کر دیا۔ سوشل میڈیا کی وجہ سے معاشرے میں بہت سی اخلاقی و سماجی خرابیوں نے فروغ پایا اور ایسی سرگرمیاں بھی عروج پر ہیں جو معاشرےمیں برائی اور انتشار کا سبب بنتی رہی ہے۔
دوسری طرف اسی سوشل میڈیا کے ذریعہ بعض لوگوں نے اچھے اور دینی کاموں کو فروع دینے کا ذمہ اٹھایا اور اس کے لئے لومۃ لائم کی پرواہ کئے بغیر اپنے کام بخوبی انجام دیتےرہے ہیں۔
سوشل میڈیا پرپائے جانے والے ایپس میں واٹس ایپ اور فیس بک کثیر الاستعمال ہیں ، ان دونوں ایپس کے ذریعہ بعض دینی فکر کے حامل اور دلِ درد مند رکھنے والے حضرات نے دین کی اشاعت کا خوب کام کیا ہےاور کررہے ہیں۔
الحمد للہ واٹس ایپ پر موجود گروپ بنام ’’احکام و مسائل ‘‘اپنی ابتدائی افرینش سے ہی دینی احکام و مسائل کی اشاعت کا پابند ہے اوراس کے مفتیان کرام لوگوں کے سوالات کے جوابات شریعت مطہرہ کی روشنی میں دینے کا اہتمام کررہے ہیں،اور تا دم تحریر گروپ میں مفتیان کرام نے دوہزار چارسو اکیاسی (2481)سوالات حل کرچکے ہیں، اللہ تعالی ان کو بہرین جزا عطافرمائے ،نیز اس گروپ کی خاصیت یہ ہےکہ وہ اپنی کارکردگی اور اصول و ضوابط کی وجہ سے عوام میں کافی مقبول اور پسندیدہ ہے،اور اس سے بڑی خوشی کی بات یہ ہے کہ اس گروپ کواکابر علماء کرام و اساتذہ کرام کی سرپرستی حاصل ہے، مثلا:
(1)حضرت مولانا مفتی محمد جمال الدین قاسمی صاحب
(2)حضرت مولانا مفتی محمد تجمل حسین قاسمی صاحب
(3)حضرت مولانا سید احمد ومیض ندوی نقشبندی صاحب
(4)حضرت مولانا مفتی الیاس صاحب قاسمی
(5)حضرت مولانا مفتی مکرم محی الدین قاسمی صاحب
(6)حضرت مولانا مفتی کلیم الدین قاسمی صاحب
(7)حضرت مولانا مفتی امانت علی قاسمی صاحب
(8)حضرت مولانا مفتی اسعد اعظمی صاحب
(9)حضرت مولانا محمد غیاث الدین حسامی دامت برکاتہم العالیہ ہیں
ان کے علاوہ تمام اساتذہ کرام و محبین عطام کی خصوصی دعائیں بھی شامل ہیں۔
محترم قارئین !
ہمارے ان اکابر علماء کرام و اساتذہ عطام حوصلہ افزائی اور عوام الناس کی خواہش کی وجہ سے ہم واٹس ایپ کے ساتھ ساتھ اب فیس بک پیج کا بھی آغاز کررہے ہیں ، اس پر موجود لوگوں کے سوالات حل کرنے کے لئے ایک فیس بک اکاؤنٹ کھولا گیا ہے، اس اکاؤنٹ پر پوچھے جانے والے سوالات کا جواب ہمارے مفتیاں کرام انشاء اللہ دین گے، آپ تمام حضرات سے گذارش ہےکہ ہمارے فیس بک اکاؤنٹ منتخب کیجئے اور اسے لائک اور شیئر کریں ، تاکہ ہماری دینی خدمات سے لوگ زیادہ سے زیادہ استفاذہ کرسکے۔ جزاک اللہ
ایڈمنس:گروپ احکام و مسائل
مفتی محمد اظہر الدین حسامی پرکال
مولانا محمد غیاث الدین حسامی حیدرآباد

https://m.facebook.com/story.php?story_fbid=110632007283247&id=110430593970055&sfnsn=wiwspmo&extid=Aa4JvIzFfUKmrA1o